bloody marriage 6 killed in okara 636

اوکاڑہ،خونی شادی کا ایک اورشکار،کل تعداد چھ ہوگئی

رپورٹ:قاسم علی…
اوکاڑہ کے علاقے ون فورایل میں شادی کے خوشیوں بھرے لمحات قیامت صغری میں اس وقت تبدیل ہوگئےجب گھر میں آئے مہمانوں کیلئےدلہن کی والدہ شاہدہ بی بی دیگر خواتین کیساتھ مل کر کھانا تیارکررہی تھی کہ اچانک گیس سلنڈر دھماکہ ہو گیا جس میں خواتین ،بچوں اور مردوں سمیت تیرہ افراد شدید زخمی ہوگئے جن کو فوری طور پر رورل ہیلتھ سنٹرمنتقل کیا گیا تاہم پانچ خواتین اور تین مردوں کوانتہائی تشویشناک حالت میں لاہور ریفر کردیا گیا جہاں پر دلہن کی والدہ شاہدہ سمیت چار خواتین جان کی بازی ہارگئیں اس کے بعد دو روز قبل پینتیس سالہ نوجوان راؤ اصراربھی ایک ہفتہ موت و حیات کی کشمکش میں رہنے کے بعد جہان فانی سے کوچ کرگیا.اور آج سولہ سالہ معیزادریس بھی جان کی بازی ہار گیا ہے.
okara shadi walay ghar mai slunder phatne se 12 zakhmi
یاد رہے کہ یعقوب نامی شخص کی بیٹی کی شادی 31 مارچ کو طے تھی اور اس سلسلے میں دوردراز کے مہمان اس خوشی کو دوبالا کرنے کیلئے دو روز پہلے ہی وہاں پہنچ گئیں اور دلہن کی والدہ سمیت دیگر خواتین ایک کمرے میں بیٹھ کر سلنڈر پر کھانا تیار کررہی تھیں لیکن مہمانوں کی تعداد زیادہ ہونے کی وجہ سے کچھ خواتین نے سلنڈر کے قریب آگ بھی جلا لی جس سے سلنڈر پھٹ گیا اورآگ جلانے کی یہ غلطی قیمتی چھ قیمتی جانوں کے ضیاع کا سبب بن گئی.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اوکاڑہ،خونی شادی کا ایک اورشکار،کل تعداد چھ ہوگئی” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں