FACE organization new project lanched 236

اوکاڑہ،سماجی تنظیم فیس کی جانب سےڈیجیٹل سکیورٹی اینڈ انٹرنیٹ فریڈم فاروومین منصوبہ شروع

ضلع اوکاڑہ میں خواتین کو انٹرنیٹ کے محفوظ استعمال پر تربیت کے منصوبے کا آغاز کیا جا رہا ہےسماجی تنظیم ٖFoundation fot Awareness & Civic Engagement کی جانب سے منصوبہ برائے ڈیجیٹل سکیورٹی اینڈ انٹرنیٹ فریڈم فار وومین کی افتتاحی تقریب کا اہتمام یونیورسٹی آف اوکاڑہ میں کیا گیا۔یہ منصوبہ ادارہ ریاست ہائے متحدہ امریکہ برائے عالمی ترقی (یو ایس ایڈ) کے ایمبیسدڑز فنڈ گرانٹ پروگرام (AFGP) کی اعانت سے شروع کیا گیا ہے۔افتتاحی تقریب کے مہمان خصوصی یونیورسٹی آف اوکاڑہ کے فکلٹی آف ایجوکیشن کے انچارج ڈاکٹر خالد سلیم اورممبر پنجاب بار کونسل اختر حسین بھٹی ایڈووکیٹ سپریم کورٹ تھے۔تقریب میں یونیورسٹی آف اوکاڑہ ک ے طلبا ء و طالبات ، اساتذہ ، وکلا ، صحافیوں اور سماجی کارکنوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔
Foundation fot Awareness & Civic Engagement
تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پراجیکٹ مینجر آصفہ خان نے شرکاء کو بتایا کہ سماجی تنظیم فیس اس پروگرام کے ذریعے ایک ہزار خواتین کو انٹرنیٹ کے محفوظ استعمال اور ڈیجیٹل سکیورٹی کے حوالے سے تربیت فراہم کرے گی اور خواتین کی آن لائن سکیورٹی کو یقینی بنانے کے لیے آگاہی مہم چلائی جائے گی۔ان کا مزید کہنا تھا کہ فیس خواتین کے لیے ایک گائیڈ بک شائع کرے گی، جو خواتین کو انٹرنیٹ پر پیش آنے والی مشکلات اور ان کے تدارک مین مدد گار ثابت ہوگی، یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر ذکریا ذاکر کا کہنا تھا کہ یہ بہت اچھا قدم ہے جس سے نہ صرف خواتین کی حوصلہ افزائی ہوگی بلکہ وہ محفوظ انٹرنیٹ اور سماجی رابطوں کی ویب سائٹس کا استعمال بھی کر سکیں گی۔ممبر پنجاب بار کونسل اختر حسین بھٹی ایڈووکیٹ سپریم کورٹ کا کہنا تھا کہ وہ آ ن لائن ہراسمنٹ کا شکار ہونیو الی خواتین کو مکمل طور پر مفت قانونی معاونت فراہم کریں گے، انہوں نے کہا کہ جب کوئی آپ کو آن لائن ہراساں کرتا ہے تو آپ الیکٹرانک جرائم کی روک تھام کے قانون 2016 کے تحت ایف آئی اے کو رپورٹ کریں۔
Foundation fot Awareness & Civic Engagement

Subscribe
ہماری تمام سٹوریز اپنے میل باکس میں حاصل کرنے کیلئے سبسکرائب کیجئیے
I agree to have my personal information transfered to MailChimp ( more information )

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.