اوکاڑہ،ہاتھ سے لکھے گئے دنیا کے سب سے بڑے قرآن مجید کی نمائش کا افتتاح کردیا گیا 110

اوکاڑہ،ہاتھ سے لکھے گئے دنیا کے سب سے بڑے قرآن مجید کی نمائش کا افتتاح کردیا گیا

رپورٹ:قاسم علی

ضلع اوکاڑہ کی سرزمین باصلاحیت لوگوں سے بھری پڑی ہے جن کی طرف سے آئے روز کوئی نہ کوئی شاہکار سامنے آتا ہی رہتا ہے اسی سلسلے میں اوکاڑہ کے ایک باسی سید امتیاز حیدر مجددی نے ہاتھ سے قرآن مجید فرقان حمید کا سب سے بڑا نسخہ لکھنے کا کارنامہ سرانجام دیا ہے اس مقدس نسخے کی نمائش کی افتتاحی تقریب میں ڈپٹی کمشنر اوکاڑہ کیپٹن ریٹائرڈ محمدعلی اعجاز نے بطور خاص شرکت کی۔

گورنمنٹ پوسٹ گریجو ایٹ کالج فار بوائز میں رکھے گئے اس نسخہ کی نمائش کے موقع پرڈپٹی کمشنر کیپٹن ریٹائرڈ محمد علی اعجاز نے کہا کہ قرآن پاک ہدائیت و راہنمائی کا سر چشمہ ہے قرآن پاک قیامت تک برکت ،رحمت اور نور کا منبع ہے قرآن پاک کی تلاوت جہاں رحمت اور برکت کا باعث ہے وہیں پر اس کتاب ہدائیت کی خطاطی و کتابت بھی کسی شخص کے لئے دنیا اور آخرت میں برکت و سعادت ہے ۔

اس موقع پر ڈائریکٹر کالجز ساہیوال مسعود فریدی ،ڈپٹی ڈائریکٹر کالجز رائے ممتاز علی ،سید امتیاز حید مجددی سمیت کالج کے اساتذہ اور طالبعلموں کے ساتھ ساتھ شہریوں کی کثیر تعداد بھی موجود تھی۔ڈپٹی کمشنر کیپٹن ریٹائرڈ محمد علی اعجاز نے دنیا کے سب سے بڑے قرآن پاک کو معہ ترجمہ ہاتھ سے لکھنے پر سید امتیاز حیدر مجددی کی تحسین کرتے ہوئے کہا کہ قرآ ن پاک کی خطاطی کو دنیا میں منفرد انداز میں پیش کرنے کی سعادت ان کے حصہ میں آئی ہے اور انہوں نے جو قرآن پاک کی منفرد انداز میں خطاطی کر کے دنیا کے سب سے بڑے سائز میں قرآن پاک لکھ کر پاکستان کے لئے ایک اور اعزاز حاصل کیا ہے

اکتیس صفحات پر مشتمل یہ دیدہ زیب قرآن پاک اکتالیس فٹ لمبے اور ساڑھے آٹھ فٹ چوڑے صفحوں پر مشتمل ہے جس کو چارسو پینتیس دنوں میں مکمل کیا گیا ہے قرآن پاک کا یہ نادر نسخہ عام لوگوں کے لئے گورنمنٹ پوسٹ گریجوایٹ کالج فار بوائز میں رکھا گیا ہے ۔ڈپٹی کمشنر کیپٹن ریٹائرڈ محمد علی اعجاز نے نے ہدائیت کی کہ قرآں پاک کا یہ نسخہ گورنمنٹ پوسٹ گریجوایٹ کالج فار بوائز سمیت ضلع کے دیگر کالجز میں بھی نمائش کے لئے رکھا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں