asp depalpur arrest father,s murderer 380

اے ایس پی دیپالپور نوشیرواں چانڈیو کی پریس کانفرنس

اے ایس پی دیپالپور نوشیرواں چانڈیو نے میڈیا سے گفتگو میں کہا ہے کہ محمد نسیم کھرل مورخہ 28.01.2018کو گھر سے پاکپتن دربار گیا مگر لوٹ کر نہیں آیا جس پر ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر حسن اسد علوی کی جانب سے انہیں نسیم کھرل کی تلاش کا ٹاسک دیا گیا جس پر میں نے انسپکٹر محمود الحسن ایس ایچ او حویلی لکھا اورمحمد یٰسین ای ایس آئی اور دیگر ملازمین پر مشتمل ایک کمیٹی تشکیل دی جنہوں نے تکنیکی بنیادوں پر کڑی محنت کرکے سوجان سنگھ کے ایک غیر آباد مکان کے چھ فٹ گہرے گڑھے سے اس کی نعش برآمد کرلی تفتیش سے معلوم ہوا کہ اس کے بیٹوں نے اپنے باپ کے برے کردار اور جائیداد اپنے چھوٹے بیٹے ظفرکے نام منتقل کرنے کی وجہ سے قتل کیا ہے ۔ملزمان سے مزید تفتیش جاری ہے اور جس ٹیم نے اس مقدمہ کو حل کرنے میں کردار ادا کیا ہے اسے نقد انعام سے نوازا گیا ہے۔

Subscribe
ہماری تمام سٹوریز اپنے میل باکس میں حاصل کرنے کیلئے سبسکرائب کیجئیے
I agree to have my personal information transfered to MailChimp ( more information )

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.