haveli lakha mai wapda ki ghaflat ne aik jan le li 489

حویلی لکھا میں بجلی کی لٹکتی تاروں نے ایک اور جان لے لی،ورثاء نےنعش رکھ کرسڑک بلاک کردی

واپڈا کی غفلت کے باعث آئے روز قیمتی جانوں کے ضیاع کی خبریں منظرعام پر آتی رہتی ہیں عید کے تیسرے روزحویلی لکھاکےنواحی گاؤں دیواسنگھ کا رہائشی پنن کمہار نامی شخص فصل کو چکر لگانے کے لیے گیا تو اوپر سے گزرنے والی الیون کے وی کی کیبلز جو کہ کافی نیچے ہو چکی تھیں پنن کمہار ان کی زد میں آگیااور وہ موقع پر ہی دم توڑ دیاواقعہ کے بعد پنن کمہار کے ورثا اور اہل علاقہ نے واپڈا آفس حویلی لکھا کے سامنے ہیڈ سلیمانکی روڈ پر میت رکھ کر روڈ بلاک کر دیا اور واپڈا کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ورثا کا کہنا ہے کہ الیون کے وی کا ایک پول سے دوسرے پول تک تین ایکڑ سے زائد فاصلہ ہے جسکی وجہ سے تاریں دن بدن نیچی ہوتی جا رہی ہیں اور متعدد بار واپڈا حکام کی توجہ اس جانب مروجہ کرانے کے باوجود محکمہ نے اس پر کوئی ایکشن نہیں لیا ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں