fake doctor arrested in okara depalpur 769

دیپالپور،محکمہ ہیلتھ ملازمین عوام کیساتھ کیا گھناؤنا کھیل کھیلتے رہے،خوفناک انکشافات

دیپالپور،اس گھر کو آگ لگ گئی گھر کے چراغ سے،گزشتہ دنوں واپڈا افسر کی جانب سے جعلی گرڈ سٹیشن کے قیام کی خبر آپ نے اوکاڑہ ڈائری پرپڑھی تو ہوگی مگراب محکمہ صحت میں ملازم میاں بیوی کے کارنامے جان کر آپ کے ہوش ہی اڑجائیں گے ہوا کچھ یوں کہ سیکرٹری محکمہ صحت عمران نزیر کی ہدائت پر ڈائریکٹر ساہیوال ڈویژن ڈاکٹر صادق سلیم کمبوہ،سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر سیف اللہ وڑائچ،ڈسٹرکٹ ہیلتھ اوکاڑہ ڈاکٹرمہر ارشاد احمد ،ڈپٹی ڈسٹرکٹ ہیلتھ ڈاکٹر رائے نیاز احمد،ڈرگ انسپکٹر ملک عرفان نے عطائیت کے خلاف مہم میں کاروائی کرتے ہوئے حساس اداروں کی رپورٹس پر دیپالپور اوکاڑہ روڈ چھاپہ مارکر جعلی سرجیکل ہسپتال اور ڈائلیسز سنٹر پکڑ لیا
alrahmaan hospital
دوران تفتیش انکشاف ہوا کہ اس سنٹر کو چلانے والا خالد ندیم محکمہ صحت میں ہیلتھ ٹیکنیشن اور اس کی بیوی نرگس لیڈی ہیلتھ ورکر ہے اور انہوں نے نہ صرف سرجیکل ہسپتال قائم کررکھا ہے جہاں ہر طرح کے آپریشن کئے جاتے ہیں بلکہ انہوں نے زیرزمین ڈائلینسز سنٹر بھی قائم کرکھا ہے جہاں پر گردوں کے آپریشن بھی کئے جاتے ہیں حالاں کہ وہاں پر کوئی نیفرالوجسٹ موجود نہیں ہے ۔خالد نے دوران تفتیش بتایا کہ ڈاکٹر سمیع اللہ جو کہ ساہیوال کے سرکاری ہسپتال میں بطور نیفرالوجٹ تعینات ہیں وہ اس دائلیسز سنٹر کو چلاتے ہیں مگر جب ان سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ ایک خالد نامی شخص اس کے پاس اس سلسلے میں آیا تھا مگر میں نے صاف انکار کردیا اور مین نے کبھی بھی اس جگہ کا وزٹ نہیں کیا جس پر خالد کو گرفتار کرکے ہسپتال سیل کردیا گیا۔علاوہ ازیں امین سرجیکل سنٹرلاری اڈہ دیپالپور،آئرش کلینک نزد پنجاب ہوٹل کو بھی سیل کرکے مقدمات درج کردئیے گئے ۔
secertary health imran nazir in action

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں